Home پاکستان آزادی اظہار رائے کے نام پر اشتعال انگیز تقریر نہیں ہونی چاہئے،...

آزادی اظہار رائے کے نام پر اشتعال انگیز تقریر نہیں ہونی چاہئے، اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد(کورٹ رپورٹر) چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کا کہنا ہے کہ آزادی اظہار رائے کے نام پر نفرت انگیز یا اشتعال انگیز تقریر نہیں ہونی چاہئے۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ اطہر من اللہ نے ٹک ٹاک ایپ پر پابندی اور سوشل میڈیا رولز کے خلاف درخواستوں کو یکجا کر کے سماعت کی، عدالت نے سوشل میڈیا رولز کے خلاف درخواستوں پر عدالتی معاونین سے رپورٹ طلب کی۔ سینئر صحافی حامد میر عدالت میں پیش، بطور عدالتی معاون رپورٹ بھی جمع کرا دی۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے استفسار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ کیا تمام عدالتی معاونین نے رپورٹ جمع کرا دی ہے۔ایمان مزاری ایڈووکیٹ نے عدالت کو جواب دیا کہ کچھ عدالتی معاونین نے اپنی رپورٹ جمع کرانے کے لیے وقت مانگا ہے، عدالتی معاون فریحہ عزیز کی جانب سے جواب جمع کرانے کے لیے وقت مانگا گیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

بیوروکریسی بمقابلہ ٹیکنالوجی ذہنیت میں خلل ڈال رہی ہے

تحریر اکرام سہگل ڈیجیٹل دور میں داخل ہونے کے باوجود ہمارے سرکاری اداروں کا نقطہ نظر، ہمارے...

حکومت عوام دشمنی پر اُتر آئی ہے !

تحریر؛ شاہد ندیم احمدعوام کی بے لوث خدمت کرنے کی دعویدار حکومت نے اپنے قیام کے صرف تین ماہ کے ابتدائی...

پاک سر زمین کا نظام

زاد راہ ۔۔سیدعلی رضا نقوی پاکستان کے نظام کی خرابیوں کو ہم سب اکثر آشکار کرتے ہیں...

سر سبز و شاداب شہر

منشاقاضیحسب منشا شہروں کی آبادی بڑھ جانے سے مسائل بڑھ جاتے ہیں , وہ لوگ کتنے خوش...

ماہ زوالحجہ عبادات و فضیلت

تحریر رخسانہ اسد حج اسلام کا پانچواں رکن ہے حکم خداوندی کے سامنے سرتسلیم خم کرنے کیلے...