Home پاکستان اسلام آباد پولیس کے قبضے میں 900 لاوارث گاڑیاں ہونے کا انکشاف

اسلام آباد پولیس کے قبضے میں 900 لاوارث گاڑیاں ہونے کا انکشاف

پولیس گاڑیوں کو ضبط کرنے کے بعد 6 مہینے میں ان کی نیلامی کرنے کی پابند ہے، رپورٹ

اسلام آباد (کرائم رپورٹر)آباد پولیس نے 900 سے زائد ٹیمپرڈ اور لاوارث گاڑیوں کو ’غیرقانونی‘ طور پر اپنے پاس رکھا ہوا ہے۔ یہ بات پولیس لیگل ڈپارٹمنٹ کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کروائی جانے والی رپورٹ میں سامنے آئی جس میں بتایا گیا کہ یہ گاڑیاں پولیس اور دیگر سرکاری محکموں کے زیراستعمال تھیں۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے لاوارث اور ٹیمپرڈ گاڑیوں کے استعمال سے متعلق رپورٹ طلب کی تھی۔

کرمنل پروسیجر کوڈ (سی آر پی سی) کی دفعہ 524 کے مطابق پولیس ان گاڑیوں کو ضبط کرنے کے بعد 6 مہینے میں ان کی نیلامی کرنے کی پابند ہے۔

سیکشن کے مطابق ایسی املاک پر اگر کوئی شخص 6 ماہ کے اندر اپنا دعویٰ نہیں کرتا اور اگر وہ شخص جس کے قبضے میں ایسی املاک پائی گئی ہے، یہ ظاہر کرنے سے قاصر ہے کہ یہ اس نے قانونی طور پر حاصل کی ہے تو ایسی املاک صوبائی حکومت کے اختیار میں ہوگی اور اسے فرسٹ کلاس مجسٹریٹ کے حکم سے فروخت کیا جا سکتا ہے۔

غیر قانونی طور پر رکھی گئی گاڑیوں کے بارے میں انکشاف اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس طارق محمود جہانگیری کی زیرسماعت ایک درخواست پر سامنے آیا۔

مذکورہ درخواست شیر عالم کی جانب سے دائر کی گئی تھی جس میں ایک گاڑی کی سپر داری کی استدعا کی گئی تھی۔

ڈپٹی سپرنڈنٹ آف پولیس (لیگل)ساجد چیمہ نے کہا کہ سیکسشن 524 سی آر پی سی کے مطابق ٹیمپرڈ اور لاوارث گاڑیوں کی 6 ماہ میں نیلامی کرنا لازم ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

جنگل کی خوشبو

تحریر؛ پروفیسر محمد عبداللہ بھٹیمیں آرام دہ جو گر نرم و گداز جیکٹ اور ریشمی مفلر سے لیس ہو کر قریبی...

نہ سدھرے توسب بکھر جائے گا !

تحریر؛ شاہد ندیم احمدتحریک انصاف صوائی اسمبلیوں کی تحلیل کے اعلان کے بعد سے شش وپنج میں مبتلا ہے ،اس بات...

نہ سدھرے توسب بکھر جائے گا

تحریر؛ راہیل اکبرلاہور والوں نے بھی عجیب قسمت پائی ہے اس شہر سے جتنے وزیر اعظم بنے ہیں شائد ہی پاکستان...

لاہور کا پہلا نمبر

تحریر؛ راہیل اکبرلاہور والوں نے بھی عجیب قسمت پائی ہے اس شہر سے جتنے وزیر اعظم بنے ہیں شائد ہی پاکستان...

سرائے ادب اور مقام اقبال

تحریر؛ ناصر نقویہمارے معاشرے میں بدقسمتی سے ادب آداب پر بحث و مباحثہ تو ہوتا ہے اور دھواں دار ، چونکہ...