Home پاکستان مویشیوں میں جلدی مرض کے باعثسندھ میں مویشی منڈیوں پر پابندی عائد

مویشیوں میں جلدی مرض کے باعث
سندھ میں مویشی منڈیوں پر پابندی عائد

سندھ بھر میں مویشی منڈیوں پر پابندی کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا۔

محکمہ بلدیات سندھ نے صوبے بھر میں مویشی منڈیوں پر پابندی عائدکر دی ہے جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق مویشیوں خاص طور پر گائے میں جِلدی مرض ’گانٹھ‘ یا ’لمپی اسکن ڈیزیز‘ پھیل رہا ہے۔

مویشیوں میں پھیلنے والا وائرس کیا ہے؟ انسانوں کو کتنا خطرہ ہے؟

محکمہ بلدیات سندھ کے مطابق سانگھڑ، جامشورو، سکھر، میرپورخاص، ٹھٹہ، حیدرآباد اور کراچی میں بھی مویشیوں میں بیماری کی تصدیق ہوچکی ہے، مویشیوں میں پائے جانے والے جِلدی مرض کے باعث سندھ بھر میں مویشی منڈی کے قیام پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

ریسرچ آفیسر محکمہ بلدیات سندھ نے ہنگامی مراسلہ جاری کردیا ہے۔

لمپی اسکین ڈیزیز وائرس
یہ وائرس کیڑوں کے کاٹنے، مکھیوں اور مچھروں سے بھی جانوروں میں پھیل سکتا ہے۔ یہ وائرس کافی سخت جان ہوتا ہے اور موافق ماحولیاتی حالات میں مہینوں تک زندہ رہ سکتا ہے۔ یہ وائرس جوتوں اور دیگر زرعی آلات کے ساتھ بھی ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل ہوسکتا ہے۔

یہ بیماری ہے کیا؟
دراصل لمپی اسکن ڈیزیر ایک معتدی جلدی مرض ہے اور یہ وائرس گائے، بھینسوں اور دیگر مویشیوں کو خون چوسنے والے کیڑوں، مچھروں اور مکھی سے لگ سکتا ہے۔

ٹھٹھہ اور نوابشاہ میں بھی مویشی ’گانٹھ‘ کی بیماری سے متاثر ہونے لگے

اس مرض کے شکار جانور کی جلد پر تکلیف دہ پھوڑے اور زخم ہوجاتے ہیں، جانور کو بخار رہتا ہے، آنکھوں سے پانی آتا ہے، بھوک نہیں لگتی اور چلنے پھرنے سے گریز کرتا ہے۔

اس کے علاوہ جانور کی تولیدی صلاحیت، دودھ کی پیداوار بھی متاثر ہوتی ہے۔ بہت سے جانوروں میں اس بیماری کی زیادہ علامات ظاہر نہیں ہوتیں تاہم یہ بعض کیسز میں جان لیوا بھی ثابت ہوتی ہے۔

چونکہ یہ پھیلنے والی بیماری ہے لہٰذا اس سے متاثرہ علاقوں میں گوشت، دودھ اور دیگر ڈیری مصنوعات کی قلت ہوسکتی ہے۔

انسانوں کو خطرہ
لمپنی اسکن ڈیزیز وائرس (ایل ایس ڈی وی) سے انسانوں کو کتنا خطرہ ہے اس حوالے سے ماہرین کی متضاد آراء پائی جاتی ہیں۔ کچھ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ وائرس انسان کو براہ راست بھی متاثر کرسکتا ہے اور کوئی مچھر یا کیڑا بھی اس کا ذریعہ بن سکتا ہے۔ انسانی جسم میں یہ وائرس متاثرہ اشیاء کے استعمال، متاثرہ شخص اور دیگر طریقوں سے بھی داخل ہوسکتا ہے۔ انسانوں میں بھی یہ وائرس جلدی مرض کا سبب بن سکتا ہے۔

دوسری جانب بعض ماہرین کہتے ہیں کہ لمپی اسکن ڈیزیز سے انسانوں کے متاثر ہونے کے اب تک کوئی ٹھوس شواہد موجود نہیں ہیں البتہ بہتر یہی ہے کہ اگر کسی علاقے کے مویشیوں میں یہ وائرس پھیل جائے تو کچھ عرصے تک ڈیری مصنوعات کا استعمال ترک یا کم کردیا جائے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

مایوس نہیں ہونا’ یہ نظام ضرور بدلے گا

تحریر؛ ناصف اعواناس وقت دیکھا جا سکتا ہے کہ ملک میں شدید سیاسی بحران ہے فریقین باہم دست گریبان ہیں اور...

حق کا انعام عقل سلیم

منشاقاضیحسب منشا وہ قافلے , وہ کارواں , وہ جماعتیں , وہ ادارے , وہ تنظیمیں جن...

عمران خان پورے کا پورا توشہ خانہ ہی کھاگئے: طلال چوہدری

 طلال چوہدری نے کہا کہ عمران خان نے ملک کا جو نقصان کیا ہے اس کے ازالے کے لیے قانونی کارروائی...

سابق وفاقی وزیر مرزا ناصر بیگ کا پی ٹی آئی میں شمولیت کا اعلان

لودھراں : پی پی 224 اور 228 کےضمنی الیکشن کی انتخابی مہم کے دوران سابق وفاقی وزیر مرزا ناصر بیگ نے...

واپسی کیلئے کسی لیگی رہنما کی اجازت نہیں چاہیے، نوازشریف کا حکم کافی ہے: اسحاق ڈار

سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ انہوں نے پاکستان واپسی کا فیصلہ نواز شریف کے کہنے پر کیا۔