Home بلاگ پنجاب کی" پگ"حمزہ کے سر اور عوام کی توقعات

پنجاب کی” پگ”حمزہ کے سر اور عوام کی توقعات

روداد خیال

صفدر علی خاں

آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب کی “پگ “اب حمزہ شہباز شریف کے سر پر سجائی گئی ہے ،پنجاب نے ہمیشہ پاکستان کے دیگر صوبوں کے لئے بڑے بھائی کا کردار ادا کیا ،اس صوبے نے فراخ دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کبھی اپنے حصے کا پانی دیگر زیادہ ضروت مند علاقوں میں بانٹ دیا تو کبھی این ایف سی ایوارڈمیں خسارہ اٹھاکر دوسرے صوبوں کی مدد کی ، پنجاب کی وزارت اعلیٰ کا منصب اس لحاظ سے بہت مقدم اور اہم سمجھا جاتا ہے ،چودھری پرویز الہٰی بھی موزوں امیدوار ضرور تھے مگر سیاست میں ان سے کہیں چوک ہوگئی اور انکی تجربہ کاری دھری رہ گئی تاہم حمزہ شہباز بھی سیاسی میدان کے دبنگ کھلاڑی ہیں ،6 ستمبر 1974ء کو میاں شہباز شریف کے گھر لاہورمیں پیدا ہونیوالے
نے گورنمنٹ کالج لاہور سے گریجویشن کی، لندن سکول آف اکنامکس سے ایل ایل بی کیا،
سپورٹس بورڈ پنجاب کے چئیرمین بھی تعینات رہے، حصول تعلیم کے بعد صنعت و حرفت سے وابستہ ہوئے،مشرف دور سے انہیں قید و بند اور یرغمال بنانے کے عوامل نے ان کی خوب سیاسی تربیت کی آمریت کے دور میں جب شریف خاندان کو جلاوطن کر دیا گیا تو حکومت نے اس وقت کے نوجوان حمزہ شہباز کو یہ کہہ کر پاکستان روک لیا کہ شریف خاندان کے گرنٹر کے طور پر حمزہ شہباز یہی رہیں گے
2008ء اور 2013ء کے انتخابات میں رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے، 2018ء کے انتخابات میں رکن قومی اسمبلی اور رکن پنجاب اسمبلی منتخب ہوئے، مگر قومی اسمبلی کی رکنیت چھوڑ کر صوبائی اسمبلی کی سیٹ رکھی اور قائد حزب اختلاف (پنجاب اسمبلی) مقرر کیے گئے ،حمزہ شہباز اپنے والد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے عوام کے حقوق کی جدوجہد کرتے رہے ،عمران حکومت کی جانب سے کئی مقدمات کا بھی سامنا کرتے رہے ،مگر انکے عزم واستقلال میں کوئی فرق نہیں پڑا۔اپوزیشن کی وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد میں بھی سرگرم کردار نبھایا۔پی ٹی آئی کی سابق حکومت نے اپنے اور “پرایوں” کی مخالفت کے باوجود پنجاب کی وزارت اعلیٰ کا منصب عثمان بزدار کے حوالے کیا جو کچھ بھی ڈلیور نہ کرسکے ،یہی سبب تھا کہ پی ٹی آئی کے اندر سے بھی بغاوت کی چنگاری بھڑک اٹھی جسے زیرک سیاستدان آصف علی زرداری نے بھانپ لیا اورچنگاری کو شعلہ بناتے ہوئے تحریک عدم اعتماد لانے کا صائب مشورہ دیا ،متحدہ اپوزیشن کی جانب سے آئینی طریقہ کار پر عوام کے مسائل سے لاتعلق پی ٹی آئی حکومت کا خاتمہ کردیا گیا،مرکز میں شہباز شریف نے وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھال لیا تو پنجاب کی وزارت اعلیٰ کے لئے اپوزیشن اتحاد کی جانب سے انکے صاحبزادے حمزہ شہباز وزارت اعلیٰ پنجاب کے لئے موزوں امیدوار قرار پائے ،16اپریل 2022کو اس منصب کے لئے ووٹنگ کا مرحلہ آگیا ،پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں تشدد، گرفتاریوں، ہنگامہ آرائی کے باوجود حمزہ شہباز 197 ووٹ لے کر پنجاب کے 21 ویں وزیراعلیٰ منتخب ہوگئے۔ ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری کی زیر صدارت پنجاب اسمبلی کا اجلاس ہوا جس میں ہنگامہ آرائی کے بعد ڈپٹی اسپیکر نے نئے وزیراعلیٰ کے لیے ووٹںگ کرائی۔ بعدازاں دوست محمد مزاری کی جانب سے باضابطہ نتیجے کا اعلان کردیا گیا۔ڈپٹی اسپیکر نے اعلان کیا کہ وزیراعلیٰ کے لیے امیدوار پرویز الٰہی کوئی ووٹ حاصل نہ کرسکے جب کہ حمزہ شہباز 197 ووٹ لے کر پنجاب کے نئے وزیراعلیٰ منتخب ہوگئے ہیں۔
پنجاب کے نومنتخب وزیر اعلیٰ حمزہ شہباز نے صوبائی اسمبلی میں اپنے پہلے خطاب میں کہا ہے کہ پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے معاملے میں بھی سابق حکومت کی انا آڑے آگئی جس کی وجہ سے ملکی ترقی کو داؤ پر لگادیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ پنجاب اسمبلی میں آئین و قانون کا مذاق اڑایا گیا جبکہ دوہفتوں سے ہیجانی کیفیت طاری رہی لیکن برا وقت آتا ہے اللہ کے کرم سے چلا جاتا ہے۔حمزہ شہباز نے کہا کہ آئی ایم ایف کے پاس نہیں جانا تھا خودکشی کرنا تھی، جوزیادہ بدتمیزی کرتا ہےاسے ٹائیگرکہا جاتا ہے، عمران نیازی نے عوام کو ایک کروڑ نوکریوں کا جھانسہ دیا، بجلی 61 فیصد گیس 167 فیصد نیازی کے دو میں مہنگی ہوئی، آج عوام بہت مشکل میں ہیں۔وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ پہلی دوسری تیسری ترجیح عوام کے مسائل حل کرنا ہوگا، عوام کے مسائل کو سب سے پہلے حل کریں گے، اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلناچاہتے ہیں، ملک کی ترقی کیلئے سب کو مل کر کام کرنا ہوگا۔پنجاب کے نومنتخب وزیراعلیٰ حمزہ شہباز نے منصب سنبھالنے پر اپنے پہلے خطاب میں اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلنے کی خواہش کا اظہار کیا ہے،عوام کے مسائل حل کرنے کو ترجیح بنایا ہے اور برملا کہتے ہیں کہ بڑے بڑے دعوئوں کی بجائے عوام کی خدمت کے عزم پر کاربند رہوں گا ،حمزہ شہباز نے اپنے والد اور تایا کی عوام دوست روایات کو آگے بڑھانے کے چلن کا اظہار کیا ہے ،حمزہ شہباز کے عزم وہمت سے عیاں ہے کہ وہ پنجاب کے عوام کی مشکلات و مسائل کو سمجھ کر انہیں حل کرکے کچھ “ڈلیور”ضرور کریں گے ،انکی کامیابی کے لئے پورے پاکستان کے محب وطن عوام کی دعائیں انکے ساتھ ہیں ،پنجاب کے عوام کی ترقی اور خوشحالی پورے پاکستان کے روشن مستقبل کی ضمانت ہے ،حمزہ شہباز کو یہ بات ہرآن یاد رکھنا ہوگی ،کیونکہ عوام نے ان سے بڑی توقعات وابستہ کررکھی ہیں اس حوالے سے بڑے صوبے پنجاب کے بڑے پن کو برقرار رکھنا بھی نہایت اہم ہوگا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

دعا زہرا کی عمر 15سے 16سال کے درمیان ہے: میڈیکل بورڈ کی رپورٹ

کراچی کی مقامی عدالت کے حکم پر میڈیکل بورڈ نے دعا زہرا کی عمرکے تعین سے متعلق رپورٹ جمع کرادی۔

کپتان سمیت قومی ہاکی کھلاڑیوں کا نوکریاں دینے کا مطالبہ

کامن ویلتھ گیمز کی تیاریوں کے سلسلے میں پاکستان ہاکی ٹیم کا ٹریننگ کیمپ ان دنوں لاہور میں جاری ہے لیکن...

ملک بھر میں سندھ کورونا کیسز میں سب سے آگے

ملک بھر میں یومیہ رپورٹ ہونے والےکورونا کیسز میں سندھ سب سے آگے ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ...

رمیز راجا اور سابق کرکٹرز کی ملاقات کی اندرونی کہانی

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین رمیز راجاکی کراچی میں سابق کرکٹرز کے ساتھ ملاقات کی دلچسپ اندرونی کہانی منظر عام...

عمران خان نے اوورسیزپاکستانیوں کے ووٹ سے متعلق ترمیم کو چیلنج کردیا

سابق وزیراعظم عمران خان نے اوورسیزپاکستانیوں کے ووٹ سے متعلق ترمیم کو سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔