Home پاکستان پیٹرول اور بجلی پر عمران حکومت کے اقدام سے موجودہ حکومت کو...

پیٹرول اور بجلی پر عمران حکومت کے اقدام سے موجودہ حکومت کو کیا نقصان ہورہا ہے؟

عمران حکومت پیٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتیں جون تک نہ بڑھانے کا اعلان کرکے رخصت ہوئی تھی اور اس فیصلے سے شہباز حکومت کو مجموعی طور پر 700 ارب روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑے گا۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کہتے ہیں کہ موجودہ حکومت نے یہ فیصلہ واپس نہ لیا تو آئی ایم ایف کا پروگرام متاثر ہو سکتا ہے۔

گیس اور بجلی کے نرخ جون تک نہ بڑھانے سے حکومت کو 700ارب روپے سے زیادہ کا اضافی بوجھ برادشت کرنا پڑے گا جو جی ڈی پی کے ایک فیصد کے برابر بنتا ہے جب کہ یہ اضافی بوجھ بجلی کے نرخ میں کمی اور پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے سے ہو رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق بجلی کی قیمت میں 5 روپے کمی سے 150ارب روپے اضافی سبسڈی دینا پڑے گی جب کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت نہ بڑھانے سے 360ارب روپے، پیٹرولیم مصنوعات پر لیوی اور سیلز ٹیکس وصول نہ ہونے سے 250ارب روپے کے محصولات کم ہوں گے۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق موجودہ حکومت اس فیصلے کو ختم کرنے میں ہچکچا رہی ہے، اگر عمران خان حکومت کا فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو آئی ا یم ایف پروگرام متاثر ہوسکتا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

پاکستان کی ساکھ خراب کرنے والوں کے شر سے محفوظ رہنے کی ضرورت

اداریہ پاکستان میں الزام تراشیوں سے مخالف کو زچ کرنے کا عمل بہت پرانا ہے تاہم اب...

گجرات ڈویژن اور حافظ آباد کی عوام کا فیصلہ؟

تحریر؛ راؤ غلام مصطفیوزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الہی نے گجرات کودسویں ڈویژن کا درجہ دینے کی منظوری کے بعد باقاعدہ...

عالمی معیشت میں خاندانی کاروبار

تحریر؛ اکرام سہگلدنیا بھر میں خاندانی فرموں کا غلبہ اب اچھی طرح سے قائم ہے: عوامی طور پر تجارت کی جانے...

گجرات ڈویژن اور انسانی ہمدردی

تحریر؛ روہیل اکبرگجرات پنجاب کا 10واں ڈیژن بن گیاجس سے وہاں کے لوگوں کو سہولیات ملیں گے اب انکا اپنا نظام...

ملک بھرمیں PTCL کی انٹرنیٹ سروسز متاثر

لاہور(سٹاف رپورٹر)ملک بھر میں پی ٹی سی ایل کی سروسز ڈاؤن ہو گئیں۔ پی ٹی سی ایل...