Home بلاگ گرے لسٹ سے نکلنے کے روشن امکانات !

گرے لسٹ سے نکلنے کے روشن امکانات !

تحریر؛ شاہد ندیم
ایک مرتبہ پھرایف اے ٹی ایف کا اجلاس پاکستان کی قسمت طے کرنے جارہا ہے۔ اس اجلاس میں پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کے فیصلہ کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے، لیکن اس میں بھارت اور فرانس ایک بار پھر رکاوٹ بننے کی کوشش کرے گا ، ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں پا کستان کی مخالفت میں بھارت اپنا بھرپور کردار ادا کرتا آرہا ہے اور اس بار بھی کوشش میں ہے کہ پاکستان کوگرے لسٹ سے نہ نکلنے دیا جائے، پاکستان متعدد بار الزام عائد کر چکا ہے کہ اْس کے گرے لسٹ میں ہونے کے پیچھے سیاسی عزائم ہیں، مگر ایف اے ٹی ایف کی جانب سے اس تاثر کو جانتے بوجھتے ہمیشہ رد کیا جاتا رہا ہے ۔یہ امر واضح ہے کہ پا کستان ایک عرصے سے گرے لسٹ سے نکلنے کی کوشش کررہا ہے ،لیکن ایف اے ٹی ایف کے اہداف پر عمل کرنے کے باوجود پاکستان پر سے گرے لسٹ کی تلوار ہٹائی نہیں جارہی ہے ،تاہم اس بار پا کستان نے ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے جہاں اس کے اہداف پورے کرنے کی بھر پور کوشش کی ہے ،وہیں بڑے پیمانے پر سفارتی کائوشوں کو بھی نظر انداز نہیں کیا ہے، جرمنی، امریکہ سمیت دیگر اہم ممالک نے ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان پر پاکستان کی طرف سے کی جانے والی اہم پیشرفت پر تعاون کے حوالے سے جزوی امادگی ظاہر کردی ہے، اس حمایت کے باعث پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکلنے کے روشن امکانات نظر آنے لگے ہیں۔ایک بار پھرایف اے ٹی ایف کے جاری اجلاس میں منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت اور اس کی روک تھام جیسے معاملات میں پاکستان میں ہونے والی پیش رفت کا جائزہ لیا جا رہا ہے، اس کی بنیاد پر ہی پاکستان کو آئندہ گرے لسٹ میں رکھنے یا نکالنے کا فیصلہ ہوگا، پاکستان کو دیے گئے دو ایکشن پلان کے مجموعی طور پر 34 نکات ہیں، اس پر فروری میں ہی کام مکمل ہو جا چکا تھا، مگر گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے جس سفارت کاری کی ضرورت تھی ،پاکستان نہیں کر پایا تھا ،تاہم آج کے حالات پا نچ ماہ پہلے کے مقابلے میں خاصے مختلف ہیں ، حکومت کی تبدیلی کے بعد سے امریکہ اور پورپ کی جانب سے حمایت کے اشارے مل رہے ہیں ،چین کی جانب سے بھی مکمل سپورٹ کی جارہی ہے ،یہ ایک اچھا موقع ہے کہ پاکستان دوست ممالک کی سفارتی حمایت سے گرے لسٹ ے نکلے میں کا میاب ہو جائے ،دوسری صورت میں پاکستان کوعالمی ادارے کے آخری ہدف کے حصول تک گرے لسٹ ہی میں رکھا جائے گا۔یہ انتہائی افسوس ناک امر ہے کہ ایف اے ٹی ایف کے اجلاس سے قبل ہی بھارتی میڈیا پاکستان کے بلیک لسٹ میں شامل کیے جانے کے امکان بارے خبریں دینا شروع کردیتا ہے او ر اس بار بھی ایسی ہی کوشش کی جارہی ہے کہ پاکستان کو کسی نہ کسی طرح بدنام کرکے گرے لسٹ میں رکھا جائے، پاکستان نے بھارتی کردار کا معاملہ ایف اے ٹی ایف کے صدر کے سامنے اْٹھایا ، لیکن اس سلسلے میں ایف اے ٹی ایف پاکستان کی کوئی مدد نہیں کر رہا ہے ،ایف اے ٹی ایف بھارت کی دہشت گردانہ کاروائیوں کا نوٹس لینے کی بجائے صرف پا کستانی اہداف کا جائزہ لینے میں لگا ہے ،اس کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے بھارت کی کوشش ہے کہ پاکستان کو گرے لسٹ سے نہ نکلنے دے ،لیکن چین اور عالم عرب کی بھارت سے ناراضی پاکستان کے لیے گرے لسٹ سے نکلنے کا راستہ ہموار کرسکتی ہے، تاہم آخری فیصلہ انہوں نے ہی کرنا ہے کہ جو پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالا نہیں چاہتے ہیں۔یہ امرخوش آئند ہے کہ پاکستان نے بلیک لسٹ کے خطرے کے پیش نظر ہی ایف اے ٹی ایف کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے، ہنڈی اور منی لانڈرنگ پر قابو پانے، کالے دھن کو سفید کرنے، بینکنگ شعبے میں اصلاحات اور مشکوک ٹرانزیکشن کی مانیٹرنگ جیسے مثبت اقدامات کئے ،جو کہ ملکی معیشت اور سلامتی کیلئے نہایت ضروری تھے، لیکن اس کے باوجود پاکستان کو عرصہ دراز تک گرے لسٹ میں شامل رکھنا ایک عالمی سازش ہے،اس عالمی سازش کے نتیجے میں ہی حکومت تبدیل ہوئی اور آزمائے کو زبردستی دوبارہ آزمانے پر مجبور کیا گیا ہے ،مو جودہ حکومت عالمی قوتوں کے زیر سائیہ قائم ہوئی ہے تو اُمید کی جاتی ہے کہ وعدے کے مطابق سب کوتاہیاں بھی در گزر ہو جائیں گی ،پا کستان کو اب آ ئی ایم ایف سے قرض ملے گا اور گرے لسٹ سے نکالنے کے روشن امکانات بھی پیدا ہو گئے ہیں،لیکن اس کیلئے موجودہ حکومت کو آئندہ ڈومور کے سارے مطالبات خاموشی سے پورے کرنا پڑیں گے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

مایوس نہیں ہونا’ یہ نظام ضرور بدلے گا

تحریر؛ ناصف اعواناس وقت دیکھا جا سکتا ہے کہ ملک میں شدید سیاسی بحران ہے فریقین باہم دست گریبان ہیں اور...

حق کا انعام عقل سلیم

منشاقاضیحسب منشا وہ قافلے , وہ کارواں , وہ جماعتیں , وہ ادارے , وہ تنظیمیں جن...

عمران خان پورے کا پورا توشہ خانہ ہی کھاگئے: طلال چوہدری

 طلال چوہدری نے کہا کہ عمران خان نے ملک کا جو نقصان کیا ہے اس کے ازالے کے لیے قانونی کارروائی...

سابق وفاقی وزیر مرزا ناصر بیگ کا پی ٹی آئی میں شمولیت کا اعلان

لودھراں : پی پی 224 اور 228 کےضمنی الیکشن کی انتخابی مہم کے دوران سابق وفاقی وزیر مرزا ناصر بیگ نے...

واپسی کیلئے کسی لیگی رہنما کی اجازت نہیں چاہیے، نوازشریف کا حکم کافی ہے: اسحاق ڈار

سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ انہوں نے پاکستان واپسی کا فیصلہ نواز شریف کے کہنے پر کیا۔