Home بلاگ آپ اپنی زندگی کیسے بدل سکتے ہیں ؟

آپ اپنی زندگی کیسے بدل سکتے ہیں ؟

منشاقاضی
حسب منشا

ایک عام سے کتاب کی بیس لاکھ جلدیں صرف حرف تہجی کی صر غلطی کی وجہ سے دو دنوں میں ہاتھوں ہاتھ نکل گئیں , کتاب کا نام ہے How to change your Life , آپ اپنی زندگی کیسے بدل سکتے ہیں , غلط کمپوزنگ کی وجہ سے ,,L,, کی جگہ ,W, لائف میں لکھ دیا گیا تھا , یہ مغرب کے مصنف کی بات ہو رہی ہے اس نے یہ زحمت بھی گوارا نہ کی کہ
پکڑے جاتے ہیں فرشتوں کے لکھے پر ناحق
آدمی کوئی ہمارا دم تحریر بھی تھا

آپ کو اس کتاب کی تلاش نہیں کرنی پڑے گی , آپ کی زندگی میں حیرت انگیز تبدیلی کے لئیے ایک کتاب مل گئی ہے اور یہ کتاب بولتی ہے اور اپنے سامع کو اپنا اسیر کر لیتی ہے اور یہ کتاب ائر کموڈور خالد چشتی کی صورت میں موجود ہے , جو بولتی ہے , حضرت علی کا قول ہے کہ بولو تاکہ تم پہچانے جاؤ , آپ سی ٹی این کے زیر اہتمام ایک تربیتی سیمینار سے خطاب کر رہے تھے , چئرمین سی ٹی این جناب مسعود علی خان آگاہی کی دولت سے مالا مال ہیں جس کی وجہ سے وہ بہت حساس انسان ہیں , قومی سوچ کی یہ حامل شخصیت کا وجود ہمارے درمیان غنیمت ہے , باخبر انسان عیش نہیں کرتا وہ نسلوں , قوموں اور تہذیبوں کا مطالعہ کرتا ہے جس سے ان کو بصیرت مل جاتی ہے اور وہ وسیع المشرب ہوتا ہے , بے خبر لوگ عیش کرتے ہیں اور باخبر سیمنار کا اہتمام کرتا ہے اور ائر کموڈور خالد چشتی جسے دانشوروں کا انتخاب کرتا ہے ,

سودا جو بے خبر ہے کوئی وہ کرئے ہے عیش
مشکل بہت ہے ان کو جو رکھتے آگاھی

تلاوت قرآن کریم کے بعد قومی ترانہ اور پھر سی ٹی این کے چئیرمین جناب مسعود علی خان کے خیر مقدمی کلمات میں آج خصوصی سپیکر جناب مسعود چشتی کو تالیوں کی گونج میں گفتگو کے لیئے مائیک سنبھالنے اور ڈائس پر حاضرین سے مخاطب ہونے کی دعوت دی گئی, بس پھر کیا ہوا

تو کبھی بجلیوں سے کیھلا ہے
تو کسی کی نگاہ کیا جانے

ائر کموڈور خالد چشتی نے معلومات کا انبار لگا دیا اور ایک نئی سوچ کی طاقت عطا کی , آپ کی گفتگو اعتبار , اعتماد اور یقین کی تثلیث پر مرکوز تھی , پوری دنیا کا نظام اعتماد کی مضبوط بنیادوں پر قائم ہے اور یہ حقیقت ہے کہ اعتماد نہ ہو تو یہ کائنات چل ہی نہیں سکتی , آپ نے بڑی خوبصورتی سے حاضرین کو تقلید کی روش س ترک کر کے ایجاد کی منزل کی نشان دہی کی , عملی مثالوں سے آپ نے سمجھانے کی کوشش کی اور اپنی زندگی کو بدلنے اور خود اعتمادی کے مضبوط ارادے کو عمل کا لبادہ فراہم کیا , دوسروں کو ہدف تنقید بنانے کی بجائے اپنی ذات کا محاسبہ ہونا چاہئے , مجھے کسی دانشور کا یہ قول جو میں نقل کر رہا ہوں ہمیشہ میری لائبریری میں دیوار پر آویزاں رہنا چاہئے اور میں قارئین سے بھی ملتمس ہوں کہ وہ بھی اس قول کو عمل میں لائیں تو ہمارے ملک میں جو کفظی گولہ باری سے ماحول آلودہ اور گفتگو بیہودہ ہو گئی ہے میں صد فی صد پورے یقین سے کہہ سکتا ہوں پاکیزہ اور مثبت خیالات کی طاقت سے ہم حیرت انگیز انقلاب اپنی زندگیوں میں پیدا کر سکتے ہیں , یہ قول سی ٹی این ہال میں بھی آویزاں ہونا چاہئیے , ,, میں نے لوگوں کو بہت تولا , ناپا , جانچا اور پرکھا , لیکن جب میری اپنی باری آئی تو مجھے ترازو ہی نہیں ملا , کیونکہ مجھ سے اپنے گریبان میں جھانکا ہی نہیں جاتا , ہم کتاب کا ٹائٹل دیکھ کر خرید لیتے ہیں لیکن اندر سے کتاب کو دیکھتے بھی نہیں , ائر کموڈور خالد چشتی نے شاندار , کامیاب اور مؤثر انداز سے دلوں کو چھو جانے والے گرانمایہ جملوں سے حیرت انگیز سکوت طاری کیئے رکھا ,

مصحفی ہم تو سمجھے تھے کہ ہو گا کوئی زخم
تیرے دل میں تو بہت کام رفو کا نکلا

جناب خالد چشتی نے رسم چارہ گری ایجاد کی ہے , جناب نثار چوہدری کے سپاس گزاری کلمات طول پکڑ گئے , اس میں کوئی شک نہیں کہ وہ بہت اچھے گفتگو طراز ہیں مگر سپاس تشکر اختصار کا تقاضا کرتا ہے, سومو ریسٹوران کے مینجر کے خیالات سنے گئے , جناب مسعود علی خان نے اپنے ابتدائیہ میں جناب کرنل ممتاز حسین کی ماحول اور اسلام کے حوالے سے کاوش کو سراہا اور جواں سال ماہر تعلیم جناب فہد عباس کی صلاحیتوں کا کھل کر اعتراف کیا. محترمہ فردوس نثار , میجر مجیب آفتاب اور آپ کی شریک حیات محترمہ عذرا مجیب آفتاب , ڈاکٹر نوشین خالد , محترمہ عظمی مصطفی اور اسلام آباد سے مہمانوں نے شرکت کی اور ائر کموڈور خالد چشتی کی فکر کی قندیل کو فروزاں رکھنے کے لیئیے مسلسل اس سلسلے کو جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا ,

عمر ہو جائے اسی شغل مسلسل میں تمام
تم نئے انداز سیکھو ہم جگر پیدا کریں
واٹر اینڈ انوائرمنٹ کے حوالے سے ممتاز سکالر کرنل ممتاز حسین , قائد اعظم کے افکار و نظریات کے حوالے سے جناب ائر کموڈور خالد چشتی اور نیشنل یوتھ کے حوالے سے جناب فہد عباس رابطے میں ہیں اور سیمینار کے انعقاد سے پہلے ضمنی اجلاس میں حتمی پروگرام کی تفصیلات سے آگاہ کیا جائے گا , محترمہ شائلہ صفوان کی غیر حاضری محسوس کی گئی وہ اپنی مصروفیت کی بنا پر نہ آ سکیں , کور کمیٹی کے سارے ارکین نے ائر کموڈوت خالد چشتی کو دل کی گہرائیوں سے کامیاب سیشن پر مبارک باد دی ہے , جدید طرز و اسلوب کے بانی گفتگو طراز جناب چشتی کان کے ذریعے سامع کے در پر دستک نہیں دی بلکہ وہ سیدھے دلوں میں اترتے چلے گئے اور گرمئی گفتار سے آپ نے محفل کو بیدار رکھا , نہ کوئی سو سکا اور نہ کسی نے کوئی خواب دیکھا , چشتی صاحب نے تعبیر ان کے ہاتھوں کی لکیروں میں ڈال دی گویا

تم آئے ہو زمانے کی راہ سے
وگرنہ سیدھا تھا راستہ دل کا

ایک کتاب کا ذکر تو ابتدا میں کیا جس کا حرف تہجی غلط ہونے کی وجہ سے ہاتھوں ہاتھ کئی ایڈیشن فروخت ہوئے اور دوسری کتاب چار سو گز کا سفر مصنف مسعود علی خان کی کتاب مکرر طباعت کے مراحل میں ہے , جس میں خوبصورت سوچ اور خوبصورت احساس کا حسین امتزاج قاری کو اول سے آخر تک پڑھنے پر مجبور کر دیتا ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

انتہائےشہادت امام حسین۴

تحریر: رخسانہ اسد لاہور شاہ است حسین، بادشاہ است حسین……دین است حسین، دین پناہ است حسین……سردادنداددست دردست...

نوشہرہ: گاڑی پر فائرنگ سے پی ٹی آئی رہنما اور ان کے بھائی زخمی ہوگئے

نوشہرہ میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما معتصم باللہ کی گاڑی پر فائرنگ سے وہ خود اور ان...

ایم کیو ایم وفاق اور سندھ حکومت سے پھر ناراض، پالیسی پر نظر ثانی کا مطالبہ

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان نے وفاقی اور سندھ حکومت سے ناراضی کا اظہار کردیا۔

کراچی: مضر صحت کھانا کھانے سے 2 بچے جاں بحق، والدین کی حالت خراب ہوگئی

کراچی کے علاقے جوہر آباد میں گھر میں مبینہ طور پر مضر صحت کھانا کھانے سے 2 بچے جاں بحق جب...

اینہاں دا کاں تے چٹا ای رہنااے

روداد خیال : صفدر علی خاں اپنے اخبار کی اشاعت کا تسلسل جاری رکھنے کی خاطر سرگرم...