Home بلاگ وائلڈ لائف سفاری پارک

وائلڈ لائف سفاری پارک

ڈیرے دار
سہیل بشیر منج
گزشتہ ہفتے میرا بچوں کے ساتھ سفاری پارک لاہور جانا ہوا یہ پارک میرے بہت قریب ہے لیکن اتفاق سے بہت کم جانا ہوتا ہے اس سے پہلے میں کوئی پانچ سال پہلے گیا تھا اس چکر میں وہاں پر کافی تبدیلیاں دیکھنے کو ملیں اس بار پارک پہلے سے صاف ستھرا تھا جانوروں کی تعداد میں بھی خاصا اضافہ دیکھنے میں آیا لیکن ایک چیز جو پہلے سے بہت مختلف نہیں تھی وہ یہ کہ عید کی چھٹیاں ہونے کے باوجود بھی رش نہیں تھا اگر یہ کہا جائے کہ سمارٹ فون نے ہمارے پار کس کو ویران کردیا ہے تو شاید غلط نہیں ہوگا
باہر کے ممالک میں لوگوں کا پارکس میں جانا پاکستانی عوام کی نسبت بہت زیادہ ہے وہاں پر لوگوں نے صبح و شام کی سیر کو زندگی کا معمول بنایا ہوا ہے اور چھٹی کے دنوں میں پاركس لوگوں سے بھرے ہو تے ہیں شاید یہی وجہ ہے کہ وہ لوگ اور معاشرے ہم سے زیادہ صحت مند زندگی گزار رہے ہیں
مجھے تھائی لینڈ کے ایک پارک میں شام کے وقت جانے کا اتفاق ہوا یقین جانیں پارک لوگوں سے کھچا کھچ بھرا ہوا تھا وہاں کی سرکار کی طرف سے پارک کے کونے میں میوزک لگا کر لوگوں کو ورزش کروائی جا رہی تھی ایک انسٹیکٹر کے سامنے سینکڑوں کی تعداد میں لڑکے لڑکیاں مرد خواتین اور بزرگ ورزش کرنے میں مصروف تھے پتہ چلا کہ ان کی ورزش روٹین ورک ہے اور کئی دہائیوں سے ہے
جبکہ ہمارے ہاں چھٹی والے دن بھی پارک خالی نظر آتے ہیں سفاری پارک کے ان حالات کے بارے میں جاننے کے لیے میں نے ان کے دفتر کا رخ کیا میری ملاقات ڈائریکٹر وائلڈ لائف رانا عبدالشکور خاں اور ڈپٹی ڈائریکٹر تنویر جنجوعہ صاحب سے ہوئی
ان سے طویل نشست میں انہوں نے پاک کے حوالے سے بہت تفصیل کے ساتھ مجھے بریف کیا اور پھر باقی وقت تنویر جنجوعہ صاحب میرے ساتھ
ر ہے میں نے ان سے پارک کے رقبے اور جانوروں کے بارے میں تفصیلات حاصل کیں ان کے مطابق اس وقت پارک میں شیر، چیتے، تیندوے ،نیل گائے ،زیبرے، ہرن ،بارہ سنگھے ،مارخور ،سانپ اور بے شمار نسلوں کے ملکی اور غیرملکی پرندے ہیں شیروں کے بارے میں گفتگو کے دوران پتہ چلا کہ ان کے لیے گوشت یا جانور بازار سے خرید کر لائے جاتے ہیں جس پر ہزار روپے روزانہ ہوتے ہیں میں نے ان سے گزارش کی کہ اس وقت دنیا میں سب سے زیادہ شرح پیدائش والے جانور خرگوش ہیں کیونکہ پارک بہت وسیع رقبہ پر محیط ہے اگر اس کے ایک طرف پنجرہ بنا کر اس میں پانچ سو بریڈر خرگوش رکھ دیے جائیں تو صرف چھ ماہ کے عرصہ میں وہ شیروں اور دوسرے گوشت خور جانوروں کی ضرورت کے لئے گوشت مہیا کر سکتے ہیں اور خرگوش ایسا جانور ہے جس کو پالنے کے لیے بہت زیادہ رقم بھی خرچ نہیں ہوگی
سفاری پارک کی ترقی کے لئے اگر محکمہ کے افسران بالا میری تجویز کو شامل کر لیتے ہیں تو آہستہ آہستہ سفاری پارک کے روزانہ کے اخراجات میں کافی حد تک مدد مل سکتی ہے
میں نے دوسری گزارش یہ کی کہ اگر سفاری پارک کے خالی رقبہ پر پھل دار درخت لگا دیے جائیں تو یہ آکسیجن کے ساتھ بڑی مقدار میں فروٹ مہیا کریں گے ان کی فروخت سے آمدنی میں اضافہ نہ سہی لیکن اخراجات پورے کرنے میں تو مدد مل سکتی ہے

تیسری گزارش یہ کی کہ پارک کے ایک حصہ کو کمر شل جانوروں اور پرندوں کی افزائش کے لیے مختص کر دیا جائے انہیں ملازمین سے خدمات حاصل کر کے ہزاروں کی تعداد میں خوبصورت پرندے ،طوطے، کبوتر ،باز،تیتر ،بٹیر اعلی نسل کے کتے، بلیاں ،گھوڑے پالے جائیں اور انہیں شوقین حضرات کو فروخت کر دیا جائے اس سے بھی پارک کی آمدنی میں کروڑوں روپے سالانہ کا اضافہ کیا جا سکتا ہے
چوتھی گزارش یہ کی کہ
اگر ممکن ہو تو نوجوانوں کے لیے کراٹے کلب، جیم، فٹنس سینٹر وغیرہ کھولے جائیں اور ان سے مناسب فیس حاصل کرکے انہیں ٹریننگ دی جائے یہ پروجیکٹ بھی پارک کی آمدنی میں مددگار ثابت ہوگا
پانچویں تجویز یہ پیش کی کہ
سفاری پارک اس وقت بہت سی سوسائٹیز کے درمیان آ چکا ہے اگر اس میں کاسمو کلب، جمخانہ اور او سس کلب کی طرز پر کلب اور ریسٹ ہاوس بنا دیا جائے جس میں لوگوں کو تمام سہولتیں دی جائیں اور اس کی ممبر شپ فیس رکھی جائے اس سے بھی پارک کی آمدنی میں خاصا اضافہ ہو سکتا ہے
چھٹی تجویز
یہ تھی کہ اگر اس میں دو یا تین کمرشل سوئمنگ پول بنا دیے جائیں جس کی ایک مناسب ٹکٹ ہو اور گرمیوں میں یہ پارک کی آمدنی میں لاکھوں روپے اضافہ کا سبب بن سکتے ہیں
میں نے سفاری پارک کی انتظامیہ سے گزارش کی کہ یہ سفارشات حکام بالا تک ضرور پہنچائیں اگر میری تجاویز قابل عمل ہوں تو ان پر عمل پیرا ہو کر پارک کو اپنے اخراجات میں خود کفیل بنایا جا سکتا ہے
اور آخر میں میں محکمہ وائلڈ لائف کے ڈائریکٹر جناب عبدالشکور خان صاحب ڈپٹی ڈائریکٹر تنویر جنجوعہ صاحب اور ان کی ساری ٹیم کا تہہ دل سے مشکور ہوں جنہوں نے مجھے خصوصی وقت دیا اور پروٹوکول سے نوازہ

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

’کیا ہم واقعی آزاد ہیں؟

تحریر : ایم فاروق انجم بھٹہ سوچیۓ کہ اگر ہم واقعی آزاد ہیں تو اب بھی ہم...

جناح انمول ہے

منشاقاضیحسب منشا شاعر مشرق علامہ اقبال نے چراغ رخ زیبا لے کر اس ہستی کو تلاش کر...

پی سی بی نے تینوں فارمیٹ کیلئے 33 کھلاڑیوں کے سینٹرل کنٹریکٹ جاری کر دیے

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے تینوں فارمیٹ کے لیے 33 کھلاڑیوں کے سینٹرل کنٹریکٹ جاری کردیے ، ٹیم کے...

کراچی میں شدید بارشیں، انٹرمیڈیٹ کے 13 اگست کے پرچے اور پریکٹیکلز ملتوی

اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی نے شہر میں شدید بارشوں کے پیش نظر ہفتہ 13 اگست کو ہونے والے انٹرمیڈیٹ کے...

ٹکٹ کی مد میں 20 روپے زیادہ کیوں لیے؟ شہری 22 سال بعد مقدمہ جیت گیا

بھارتی شہری ریلوے ٹکٹ کی مد میں 20 روپے زیادہ لینے کے خلاف کیا گیا مقدمہ بلآخر 22 سال بعد جیت...