Home بلاگ کرو مہربانی تم اہل زمیں پر

کرو مہربانی تم اہل زمیں پر

تحریر۔۔۔عظمت عظیم

تم جو دیتے ہو ۔۔۔۔۔۔۔
وہ تم نہیں دیتے ۔۔۔۔۔۔
وہ اللہ تمھیں خاص توفیق دیتا ہے
اس لئے تم دیتے والے بنتے ہو اور وہ خوش قسمت ہوتا ہے جو دینے والا بنتا ہے۔۔۔۔۔۔
جو کوئی اس کے چرند پرند اور انسانوں پہ خرچ کرتے ہیں ان کے لئے آسانیاں پیدا کرتے ہیں وہ دراصل اللہ کی توفیق سے کرتے ہیں اللہ دینے کی توفیق اپنے خاص بندوں کو دیتا ہے مہربان ہونا اللہ کی صفت ہے جب انسان اللہ کی صفت اپنا لیتا ہے تو اللہ اس پر اپنی مہربانیوں کے دروازے کھول دیتا ہے
اپنی زندگی کا ایک چھوٹا سا تجربہ آپ کے سامنے پیش کرنا چاہوں گی کچھ عرصہ پہلے اچانک مجھے شدید قسم کی بیماری نے گھر لیا ٹسٹ وغیرہ کروانے میں کافی خرچہ ہوا ہر ماہ دواؤں کے استعمال سے بیماری کی شدت تو کافی ختم ہو گی لیکن کم نہیں ہوئی بدقسمتی یہ بیماری کی کیفیت میں کسی سے بیان بھی نہیں کر پاتی میری گردن پہ جھٹکے لگتے اور لمحوں میں چکرا کر گر جاتی ایک دن چھت پہ بیٹھی ہوئی تھی کہ میں اپنے اللہ سے چپکے چپکے نم دیدہ آنکھوں سے باتیں کررہی تھی کہ مجھے اس بیماری سے تیرے علاؤہ کون نجات دے سکتا ہے ساتھ ساتھ ٹرے میں رکھے چاول صاف کر رہی تھی اتنے میں ایک ٹوٹی ٹانگ والا کوا میرے قریب آ کے بیٹھ گیا میں نے اس کی طرف ایک مٹھی چاول ڈالے اس کی دیکھا دیکھی میرے اردگرد کتنی ہی چھوٹی چھوٹی چڑیاں چوں چوں کرتی اکٹھی ہو گئی یعنی میں کوئی چاول کا دانہ پھینکتی ساری چڑیاں اور کوا کھانے کو ٹوٹ پڑتیں مجھے یہ کھیل دل چسپ لگنے لگا میں چاول پھینکتی جاتی وہاں سینکڑوں کی تعداد میں بھوکی چڑیاں کھانے کے لئے لپکتی میں کچھ لمحوں کے لئے اپنی تکلیف بھول کر چڑیاں کے کھیل میں مگن ہو گئی دوسرے دن میں پھر اسی وقت شام کو فارغ ہو کر غیر ارادی طور پر پلیٹ میں چاول ڈال کر چھت پہ جا بیٹھی پھر میرے اردگرد چڑیاں آنا شروع ہو گئیں ان کی دیکھا دیکھی دوسرے اور پرندے بھی آنا شروع ہوگئے اور میں آہستہ آہستہ ان کی حرکات و سکنات دیکھنے لگی اس کھیل میں میں واقعی اتنی دلچسپی لینے لگی کہ میں اس وقت کا انتظار کرتی اور اپنی روٹین سے چھت پہ جا کے پرندوں کو دانہ ڈالتی رہی اب مختلف رنگوں کی چڑیا فاختہ کبوتر کوے سب میرے اردگرد اکھٹے ہونا شروع ہوگئے اور میں عصر سے مغرب تک اس کھل کو دلچسپی سے کھیلتی انہی دنوں کرونا لاک ڈون کی وجہ سے چٹھیاں بھی چل رہی تھی اس لئے فراغت ہی فراغت تھی آپ یہ پڑھ کر حیران ہونگے کہ ان اوقات میں میں یکسر بھول جاتی کہ مجھے کوئی تکلیف بھی ہے ساری دل چسپی اور توجہ مختلف قسم کے پرندوں کو کھاتا دیکھتی رہتی
ایک دن میں بازار گی تو پرندوں کے ڈھیر سا دانہ باجرہ ٹوٹا چاول اور ساتھ ہی دو مٹی کی کنالیاں لے کر آئی سر جی کی مدد سے میں نے انھیں چھت کی دیوار پہ ایک جگہ پکی لگوادییں ایک میں چاول دوسری میں پانی ڈال دیتی پرندے دانہ کھاتے پانی پیتے اور ڈبکیاں لگا لگا کے نہاتے اور میں فاصلے پہ بیٹھ کی انہیں دیکھ کر محظوظ ہوتیں
عزیز قارئین!!!
میرا یقین کریں وہ بیماری جو مجھے ہر وقت مایوس اور افسردہ کئے رکھتی ایسا لگتا جیسے پرندوں نے دانہ پانی کھا لینے کے بعد مل کر میرے لئے دعائیں کیں وہ بیماری یکسر ختم ہو گئی ہم لاکھوں روپے اپنی بیماریوں پہ خرچ کر لیتے ہیں لیکن اس کی مخلوق انسان ہوں یا جانوروں پہ خرچ کرتے ہوئے حساب کتاب کرنا شروع کر دیتے ہیں
بات تو بہت معمولی تھی لیکن بڑے کام کی لگی کہ اگر پرندوں جانوروں پہ رحم کیا جائے ان پہ خرچ کیا جائے تو اللہ ان کے صدقے آسانیاں فرما دیتا ہے اور اگر اس کے انسانوں پہ خرچ کیا جائے تو وہ کتنا خوش ہوتا ہو گا؟
تب مجھے سمجھ آئی کہ کسی کے لئے آسانیاں پیدا کرنے سے اپنی مشکلات کیسے حل ہو جاتی ہیں صدقہ بلاؤں کو دور کر دیتا ہے دکھ اور تکالیف ختم کر دیتا ہے اب میرے گھر کے ماہانہ بجٹ میں پرندوں کا دانہ روٹین سے آتا ہے
اگر آپ کو دوائیوں سے آرام نہ آ رہا ہو، پریشانیاں ختم نہ ہورہی ہوں، تنگدستی سے نجات حاصل کرنا چاہتے ہوں
تو کسی کی مدد کر کے دیکھیں کسی کے لئے آسانیاں پیدا کر کے دیکھیں صدقہ دے کر دیکھیں ۔۔۔۔۔۔
آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہر نیک کام صدقہ ہے جب کوئی شخص کوئی پھل دار درخت یا فصل اگاتا ہے اس کا پھل جانوروں پرندوں کے کھانے پر بھی لگانے والے کو صدقے کا ٹواب ملتا یے جس طرح انسانوں کے ساتھ نیکی و آسانی کرنا صدقہ ہے اس طرح اللہ کی سب مخلوقات پر رحم کرنا بھی صدقہ ہے
اپنے رزق سے اپنی نیک کمائی سے کسی کو دینے کی ہر ممکن کوشش کیا کریں خواہ ظاہر خواہ پوشیدہ۔۔۔۔۔ایسا کرنے سے آپ کا مال اسباب صاف ہو جاتا ہے بے شک آپ کسی کے رازق نہیں رازق تو اللہ کی ذاتِ ہے اس ذات نے آپ کو تو صرف وسیلہ بنایا ہے آپ کے ہاتھ سے وہ اپنی مخلوقات کی مدد کرواتا ہے اگر ایک مٹھی آٹا بھی چیونٹیوں کو ڈال دو گے تو سمجھو تمہارا صدقہ ہوگیا۔
ہمارے گھروں سے برکتیں اسی لئے اٹھ گئی ہیں لوگ اللّہ کی مخلوق کا خیال رکھنا بھول چکے ہیں۔۔۔۔۔ نہ انسانوں پہ رحم کیا جاتا ہے نہ جانوروں پہ۔۔۔۔
پہلے کسی گھر کے سامنے کُتا بلی بھی آکر بیٹھ جاتا تھا، تو گھر کی عورتیں اسکے سامنے بھی کچھ نہ کچھ بچا کھچا سالن روٹی رکھ دیا کرتی تھیں مگر اب ایسا نہیں ہوتا، کیونکہ اب گھروں میں روٹیاں بھی گن گن کر پکائی جاتی ہیں تاریخ گواہ ہے کہ جانوروں کے ساتھ حسن سلوک پرسب سے زیادہ زور محسن انسانیت حضرت محمدؐنے دیا اور اس کا عملی مظاہرہ بھی کیا۔ جانوروں کو وقت پر خوراک دینے کی ہدایت فرمائی، زیادہ بوجھ ڈالنے سے منع فرمایا ہم دن بدن مذہب سے دور ہوتے جارہے ہیں اسی لئے
ہمارے گھروں میں برکتیں ختم ہو رہی ہیں آفات آسمانی بلائیں بن کر نازل ہوتی ہیں زلزلے سیلاب آتے ہیں دولت جمع کرنے کی ہوس میں ہر شخص مضطرب و بے چین ہے اپنے جمع پونجی سے کسی کو ایک روپیہ دینا پسند نہیں کرتا لاکھوں کی دولت میں سے صدقہ دینے کے لئے صرف چند سکے مشکل سے دینے کو تیار ہوتے ہیں کسی کی مدد کے لئے ہر وقت تیار رہنا چاہے صدقہ خیرات سمجھ کے نہ دیں کسی کی مدد سمجھ کر کچھ کریں مہربانی کریں نہ صرف انسانوں پہ بلکہ اس کے چرند پرند کے لئے بھی آسانیاں پیدا کرتے رہنا چاہیے
بھوکا کیا صرف انسان ہوتا ہے؟ اللّہ کی ساری مخلوق کو چھوٹی ہو یا بڑی بھوک تو سب کو ستاتی ہے اگر گھر میں غربت ہے تو اللہ کی راہ میں کچھ دے کر دیکھیں کچھ صدقہ خیرات کر کے دیکھیں یقین کریں کچھ عرصے بعد ہی گھروں میں تنگی و تکالیف دور ہو کر خوشحالی آجاتی ہے
اللہ تعالیٰ نے کشادہ رزق کے حصول کے لئے بارہابار صدقے کا حکم دیا ہے باری تعالیٰ خود فرماتے ہیں۔۔۔۔۔ کہ تم اللہ کی راہ میں جو خرچ کرو گے اللہ اس کا بدلہ دے کر رہے گا، انسان جتنا دوسروں پر خرچ کرے گا اللہ اسے دس گنا بڑھا کر دے گا.اور یہ بھی فرمایا رزق کو، محنت میں تلاش مت کرو، یہ صدقہِ سخاوت میں پوشیدہ ہے” لوگوں کی ظاہری و پوشیدہ مدد کرو
پورے سال میں — کسی انتہائی ضرورت مند کی کوئی ضرورت پوری کر دیں صرف ایک قرض دار کا قرض اتروا دیں ، کسی بیمار کا علاج کروا دیں کسی بیوہ کی کوئی مدد کر دیں مستحق کو تعلیم دلوا دیں یا اپنے اچھے عمل سے کوئی ٹوٹا ہوا دل جوڑ دیں دوسروں پہ رحم کریں تاکہ تم پہ بھی رحم کھایا جائے کسی ایک انسان کی مشکل آسان کر دیں ۔۔ سمجھیں آپ کے سال کا حق ادا ہو گیا ہے اللہ پاک ہمیں آسانیاں تقسیم کرنے کی توفیق عطا فرمائے آمین۔۔۔۔۔۔🌹
کرو مہربانی تم اہل زمیں پر
خدا مہرباں ہو گا عرش بریں ہر

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Must Read

test

test

صحابہ کرام اہلبیت امہات المومنین کی توہین پر قانون سازی

تحریر: محمد ریاض ایڈووکیٹآئین پاکستان کے تحت مملکت کا نا م اسلامی جمہوریہ پاکستان اور سرکاری مذہب اسلام ہے۔اسکے باوجود پاکستان...

مجھے اس دیس جانا ہے

منشاقاضیحسب منشا مجھ پر پہلی بار اس بات کا انکشاف ہوا جب میں نے نثری ادب میں...

دنیا کا سب سے بڑا مقروض ملک ہونے کے باوجود جاپان ڈیفالٹ کیوں نہیں کرتا؟

گزشتہ سال ستمبر کے آخر تک جاپان اس حد تک مقروض ہو چکا تھا کہ قرضوں کے اس حجم کو سُن...

پی ٹی آئی کا سندھ اسمبلی سے مستعفی نہ ہونے کا فیصلہ

کراچی (سٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک (پی ٹی آئی) نے سندھ اسمبلی سے مستعفی نہ ہونے کا فیصلہ کرلیا۔